بجلی صارفین کو اضافی بلنگ پر رقم واپس کرنے کا معاملہ، پاور ڈویژن کی ابتدائی رپورٹ سامنے آ گئی

نیپرا کا بجلی صارفین کو اضافی بلنگ پر رقم واپس کرنے کا معاملہ، پاور ڈویژن کی اووبلنگ کے حوالے سے ابتدائی رپورٹ سامنے آ گئی۔

تفصیلات کے مطابق پاورڈویژن نےلاکھوں بجلی صارفین کی زائد بلنگ کا اعتراف کرلیا۔ پاور ڈویژن نے زائد بلنگ،خراب میٹرز،صارفین کےسلیب تبدیل ہونے کا اعتراف کیا۔ پاور ڈویژن نےنیپرا کی تحقیقاتی رپورٹ پرابتدائی رپورٹ مرتب کرلی۔

رپورٹ کے مطابق جولائی میں45لاکھ سے زیادہ بجلی صارفین کو31 دن سے زائد کےبل بھیجےگئے، ان میں40 لاکھ صارفین کو32 سے 34 دن کے بل بھجوائے گئے۔

پاور ڈویژن نے 3 لاکھ81 ہزار 510 خراب میٹرز سے زائد بلنگ کا اعتراف کیا۔ جولائی میں45 لاکھ43 ہزار717صارفین کو زیادہ دن کے بلز بھیجے گئے، جولائی میں سلیب کی تبدیلی سے8لاکھ46ہزار468صارفین متاثر ہوئے ، جولائی میں ایک لاکھ98ہزار 166صارفین پروٹیکٹڈ سےنان پروٹیکٹد میں چلے گئے، جولائی میں11 ہزار276 لائف لائن سے نان لائف لائن میں چلے گئے، اگست میں55لاکھ74ہزار275 صارفین کو زیادہ دن کے بلز بھیجے گئے ، اگست میں سلیب کی تبدیلی سے 8لاکھ25ہزار562صارفین متاثر ہوئے۔ اگست میں ایک لاکھ 13 ہزار 879 صارفین سے پروٹکیڈ سے نان پرویکٹڈ میں چلے گئے، جبکہ 6 ہزار 217 صارفین سے لائف لائن سے نان لائف لائن میں چلے گئے۔

پاور ڈویژن نےنیپرا تحقیقاتی رپورٹ کےاعدادوشمار کو مبالغہ قرار دیا ہے۔ رپورٹ میں پاور ڈویژن نےنیپرا ٹیم کے طریقہ کار کو غلط اور غیر موثر قرار دے دیا۔ نیپرا رپورٹ میں کوالٹی کنٹرول اور ڈیٹا پروسیسنگ کی غلطیاں ہیں، سیمپلنگ کرتے وقت نیپرا ٹیم نے جانبداری کا مظاہرہ کیا ، بجلی کمپنیوں کی آپریشنل مشکلات کو ملحوظ خاطر نہیں رکھا گیا۔

واضح رہے کہ پاور ڈویژن نے رپورٹ ڈسکوز اور پاور انفارمیشن ٹیکنالوجی کمپنی سے مرتب کرائی ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.