تبدیلی لانے والوں نے عوام کےلئے کچھ نہیں کیا، سینیٹر عثمان کاکڑ

0

کوئٹہ(حال نیوز)پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے صوبائی صدر و سینیٹر عثمان کاکڑ نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے ترقی کی ہے مگر منفی شکل میں کی ہے تبدیل لانے والوں نے عوام کے حقوق کے لئے کچھ نہیں کیا ملک کو ٹھیک کرنے کے لئے حقیقی فیڈریشن کا قیام عمل میں لانا ہوگا سیاست عوام کا حق ہے کہ وہ کس کو اقتدارمیں لانا چاہتے ہیں کسی اورکو یہ حق کس نے دیا کہ وہ لوگوں کو اقتدار میں لانے کے لئے فیصلے کرے پشتون خوا ملی عوامی پارٹی اس عمل کو غیر جمہوری عمل قرار دیتی ہے صوبے میں عوام کی منتخب کردہ حکومت نہیں ہے بلکہ مسلط کردہ حکومت ہے پی ایس ڈی پی کا اختیار حکومت کے پاس ہونا چاہئے دوسروں کے ہاتھ میں پی ایس ڈی پی دینے سے یہی حشر ہوتا ہے جس طرح رواں سال کی پی ایس ڈی پی خرچ ہونے کے بجائے لیپس ہونے جا رہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوںنے ایک نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کیا سینیٹر عثمان کاکڑ نے کہا کہ ملک میں برابری کی بنیاد پر تمام اقوام کو ان کا حق دینا چاہئے پنجاب سمیت دیگر صوبوں کو اپنے وسائل مبارک ہوں مگر ہم اپنا حق کسی او ر کو نہیں دینگے اگر کسی نے زور زبردستی کی تو ہم جمہوری طریقے سے اپنے حقوق حاصل کریں گے ملک کو ٹھیک کرنے کے لئے واحد راستہ یہی ہے کہ یہاں حقیقی فیڈریشن ہو اور تمام اقوام کو اپنے حقوق حاصل ہوں انہون نے کہا کہ آج بھی پارلیمنٹ کی بالادستی نہیں ہے اور کچھ لوگوں نے پارلیمنٹ کی بالا دستی کی بجائے کسی اور کی بالا دستی کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں جس کی وجہ سے آج ملک می جمہوری نظام کمزور ہوتا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ جب تک پارلیمنٹ با اختیار نہ ہو اس وقت تک ہماری داخلہ و خارجہ پالیسی ٹھیک نہیں ہوگی سیاست کرنا عوام کا حق ہے کہ کس پارٹی کوعام انتخابات میں اقتدارمیں آنے کے قابل سمجھتے ہیں یا نہیں کسی اور کو یہ اختیار کس نے دیا ہے کہ وہ لوگوں کو اقتدار کو لانے کے لئے لابنگ کرے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے ترقی کی ہے مگر یہ ترقی صرف اور صرف منفی شکل میں ہے موجودہ صوبائی حکومت ہر شعبے میں ناکام ہو چکی ہے پی ایس ڈی پی ریلیز نہ ہونا موجودہ حکومت کی نااہلی اور بے حسی کا سب سے بڑا ثبوت ہے جب دوسروں کے کندھے پر اقتدار میں آیا جاتا ہے تو ان کے پاس اختیار کم ہوتا ہے.

Leave A Reply

Your email address will not be published.