چیف جسٹس صاحبان پاکستان کیساتھ کھلواڑ کرتے رہے، ان کی الٹی گنتی شروع ہوگئی، علی احمد کرد

کوئٹہ سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سابق صدر علی احمد کرد ایڈووکیٹ نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ ہم اور ہمارے کرتوت پرانی ضرب المثل ہے کہ جیسا بیج ڈالو گے ویسی ہی فصل کاٹو گے، آج ہمارے سارے کرتوت مع سود کے سامنے آگئے ہیں کیا ثاقب نثار کھوسہ اور کیا ان سے پہلے اور بعدکے آنے والے چیف جسٹس اس ملک کے ساتھ جو کھلواڑ کرتے رہے آج محض اس جواب دہی کے ڈر خوف سے کہ کل کیا پوچھ گچھ ہو سپریم کورٹ جیسی بڑی عدالت سے صرف چند گھنٹوں کے وقفے سے دو جج اپنے منصب سے مستفی ہوگئے

دنیا میں عدالتوں کے اعلی معیار کے پیمانے میں ہم پہلے سے ہی 129 نمبر پر ہیں یقینا آج تو اور نیچے پہنچ گئے ہوں گے جب یہ لوگ کرسی پر ہوتے ہیں تو ان کے گھمنڈ اور تکبر سے زمین لرزتی ہے مگر ہم وکلا نے ہمیشہ ان کے سامنے کھڑے ہو کر ان کو سمجھایا کہ شراب کی آدھی بوتل کی پکڑ دھکڑ کے بجائے لوگوں کو انصاف مہیا کرو، میں جیلوں میں اپنے رہنے کے تجربے پر کہتا ہوں کہ آج بھی جیلوں میں قید ایک تہائی قیدی بے گناہ بند ہیں، آج بھی جو لوگ اور اسٹیبلشمنٹ کی طاقتیں اس ملک کے ساتھ یہی کھلواڑ کر رہے ہیں ان کے لیے یہ خطرے کی گھنٹی ہے یعنی الٹی گنتی شروع ہو چکی ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.