کوئٹہ میں گیس کے اضافی بلوں کیخلاف شہریوں کا سدرن کمپنی کے باہر دھرنا

کوئٹہ  کوئٹہ میں گیس بلوں میں اضافی چارجز کے خلاف کوئٹہ کے شہریوں نے گیس آفس کے سامنے سمنگلی روڈ کو ہر قسم کے ٹریفک کیلئے بلاک کردیا اور مطابلہ کیا کہ بلوچستان کے ہائی کورٹ کے فیصلہ کے مطابق اضافی چارجز واپس لیے جائے کروڑوں روپے جرمانے کی مد میں شہریوں سے وصول کیے جارہے ہیں

جبکہ کوئٹہ کے بیشتر علاقوں میں شدید سردی کے باوجود گیس پریشر نہ ہونے کی وجہ سے عوام کو مشکلات کا سامنا ہے احتجاجی مظاہرین نے اعلان کیا کہ جب تک سوئی سدرن گیس کمپنی کوئٹہ شہر میں گیس پریشر کو بہتر نہیں بناتی اور بلوں میں اضافی چارجز کا فیصلہ واپس نہیں لیتی اس وقت تک ہم سمنگلی روڈ کو ٹریفک کیلئے نہیں کھولیں گے

تاہم گیس حکام نے یقین دہانی کرائی کہ کوئٹہ شہر میں گیس پریشر کو بڑھا دیا جائے گا اور اضافی چارجز کے حوالے سے ہیڈآفس سے رابطہ کیا جائے گا تاکہ اس مسئلہ کا کوئی مستقل حل نکل جائے شہریوں نے ٹریفک جام کردی جس کی وجہ سے دونوں جانب سینکڑوں گاڑیاں روک گئی تاہم بعد میں گیس حکام کے یقین دہانی پر سمنگلی روڈ کو ٹریفک کیلئے بحال کردیا گیا ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.