اسرائیلی فوج کی غزہ کے رہائشی علاقوں پر بمباری، مزید 126 فلسطینی شہید

اسرائیلی فوج کی غزہ کے رہائشی علاقوں پر بمباری سے مزید 126 فلسطینی شہید  ہوگئے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق اسرائیل کے وسطی اور جنوبی غزہ پر شدید حملے جاری ہیں،گزشتہ 24گھنٹوں میں اسرائیلی فوج کی کارروائی میں مزید 126 فلسطینی شہید اور 241 زخمی ہوگئے۔

ادھر مغربی کنارے میں بھی اسرائیلی فوج کی وحشیانہ کارروائیاں جاری ہیں، فائرنگ کے نیتجے میں 4 نوجوانوں کو قتل کیا اور پھر زمین پر پڑے نوجوانوں پر گاڑیاں چڑھا دیں۔

اس کے علاوہ طولکرم میں اسرائیلی ڈرون حملے میں متعدد فلسطینی زخمی ہوئے۔

دوسری جانب حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈز نے اسرائیلی فوج پر وار کرتے ہوئے اسرائیلی ٹینک تباہ کر دیا اور مزید 9 اسرائیلی فوجی ہلاک کر دیے۔7 اکتوبر سے زمینی آپریشن میں اب تک ہلاک اسرائیلی فوجیو ں کی تعداد 180 سے تجاوز کرگئی ہے۔

اسرائیلی فوج نے غزہ میں اب تک کی سب سے بڑی اسلحہ ساز فیکٹری پکڑنے اور حماس کے 40 ارکان شہید کرنے کا بھی دعویٰ کیا ہے۔

اس کے علاوہ  اسرائیلی فوج نے جنوبی لبنان میں حزب اللہ کے 3 ارکان شہید کر دیے جبکہ اسرائیلی وزیر خارجہ نے لبنان میں حزب اللہ کمانڈر وسام الطویل کے قتل کی ذمے داری بھی قبول کرلی  ہے۔

ادھر مشرقِ وسطیٰ کا دورہ کرنے والے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کی اسرائیلی وزیراعظم سے ملاقات  ہوئی۔

امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق بلنکن نے نیتن یاہو پر غزہ میں شہریوں کا جانی نقصان کم کرنے، خطے میں پائیدار امن اور فلسطینی ریاست کے قیام کی ضرورت پر زور دیا۔

واضح رہے کہ 7 اکتوبر سے اب تک غزہ میں فلسطینی شہدا کی تعداد 23 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے۔اقوام متحدہ کا کہناہے غزہ قحط کی طرف بڑھ رہا ہے، پناہ گاہوں میں جگہ نہیں رہی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.