75سال سے قابض لوگ اتنی آسانی سے آپ کو اپنا حق نہیں دیں گے، نواب ایاز جوگیزئی

کوئٹہ  پشتونخواملی عوامی پارٹی کے مرکزی سیکرٹری نواب محمد ایاز خان جوگیزئی نے کہا ہے کہ ظالم اور مظلوم کی لڑائی میں مظلوم کا ساتھی ہوں ، حق کا ساتھ دیتا رہونگا، فرسودہ نظام سے باہر نکلنے کیلئے متحدہونا ہوگا ، 75سالوں سے قابض لوگ اتنی آسانی سے آپ کو اپنا حق نہیں دینگے، پارلیمانی نظام کے قیام ، پارلیمان کی کارروائی پوری دنیا دیکھتی ہے جنگ آج کل ووٹ کی پرچی کا ہے ،کاغذ کی اس ایک پرچی سے آپ اپنے حالات بدلنے اور حقوق کے حصول کیلئے اپنا کردار ادا کرسکتے ہیں،

پشتونخوامیپ کے جو بھی نمائندے عوام کے ووٹ کی طاقت سے اسمبلی جائینگے وہ عوام کو جوابدہ ہونگے، ہمارے صوبے میں بیروزگار زیادہ ہیں تعلیم یافتہ نوجوان نوکریاںنہ ہونے کے باعث مایوس ہوکر محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہیں لیکن حکمران انہیں محنت مزدوری ، تجارت ، روزگار کا حق بھی نہیں دے رہی ، صوبے کے عوام غریب ، نوجوان بیروزگار لیکن مسلط ہونیوالے لوگ سرکاری خزانے سے کروڑوں اربوں روپے لوٹ لیتے ہیں جب تک نظام نہیں بدلا جاتا مستقل نظام تشکیل نہیں پاتا تب تک ناانصافیاں جاری رہیگی ، نااہل نمائندوں کی وجہ سے اربوں روپے لیپس ہوجاتے ہیں ،پشتون قوم قدرت کی بیش بہا نعمتوں سے مالامال لیکن اپنے وسائل پر حق حاکمیت وحق ملکیت سے محروم ہےں ، جس کے باعث ہمارے نوجوان مزدوری کی حیثیت سے ملک وبیرون ملک محنت مزدوری کررہے ہیں، ہم آج بھی جب گھر میں بیٹھتے ہیں تو یہ مشورہ کرتے ہیں کہ کونسے بیٹے ، بھائی کو کہاں مزدوری کیلئے بھیجنا ہے تاکہ وہ کما کر گھر کے اخراجات کو پورا کرسکے ، کراچی جیسے شہر میں ہمارے بچے کچرہ اٹھاکر اپنی روزی روٹی کماتے ہیں ،

وزیرستان سے لیکر چمن تک ہمارے پشتون اپنے گھروں سے دور دیار غیر میں مزدوری کررہے ہیں ، اللہ تعالیٰ نے قوموں کی زندگی اُس وقت تک نہیں بدلی جب تک قوموں نے اپنے آپ کو خود نہیں بدلا ۔ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی ملک میں پشتون قومی برابری، وسائل پر سیاسی واک و اختیار، جمہور کی حکمرانی، پارلیمنٹ کی خود مختیاری ، آئین کی بالادستی، پشتو زبان کو تعلیم، عدالت، دفتر اور تجارت کی زبان بنا نے کیلئے جدوجہد کررہی ہے اور ہم خان شہید عبدالصمدخان اچکزئی کے نقش قدم پر چل کر ہی اپنے قومی اہداف حاصل کرسکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے این اے 262، پی بی 38،پی بی 40، پی بی 43میں مختلف پرگرواموں ، اجلاسوں ، اولسی جرگوں ، شمولیت کے تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جس سے پارٹی کے ڈپٹی چیئرمین عبدالرﺅف لالا ، مرکزی سیکرٹری ملک شوکت ، صوبائی سینئر نائب صدر ضلع کوئٹہ کے سیکرٹری سید شراف آغا، صوبائی ڈپٹی سیکرٹریز منان خان بڑیچ، ملک عمر کاکڑ ، حضرت عمر ایڈووکیٹ، پی بی 38کے نامزد امیدوار ملک یاسین خان بازئی ،پی بی40کے نامزد امیدوار اختر خروٹی ، پی بی 43کے نامزد امیدوار سردار ادریس بڑیچ،تحصیل کچلاغ کے سیکرٹری ملک نادر کاکڑ، تحصیل صدر کے سیکرٹری نعیم خان پیر علیزئی ، قدیم خان ، حاجی احسان کاکڑ، قدرت بڑیچ سمیت دیگر مقررین نے کلی دیبہ میں پارٹی کارکنوں کے تربیتی سیمینار ، کلی شیخان شیراز آباد میں پارٹی کارکنوں کے سیمینار ، کلی شیخان بختو خیل سٹریٹ میں اولسی جرگے ،تحصیل کچلاغ میں علاقائی یونٹوں کے ایگزیکٹیوز کے اجلاس ، کلی شابو پائند خان ، عالمو علاقائی یونٹ کے زیر اہتمام کارکنوں کے تربیتی سیمینار ، انتخابی دفتر کے افتتاح ، پی بی 40کے 8علاقائی یونٹوں کے پارٹی ایگزیکٹیوز اراکین کے اجلاس ، کچلاغ دوئم آرگنائزنگ کمیٹی کے اجلاس، پشتون باغ کلی بادیزئی میں حاجی عطاءمحمد بادیزئی کی قیادت میں 195افراد کی پشتونخوامیپ میں شمولیت کے اجتماع سے علیحدہ علیحدہ خطاب کرتے ہوئے کیا۔

مقررین نے کہا کہ ہمیں اللہ تعالیٰ نے بیش بہا قیمتی نعمتوں سے نوازا ہے ہمارے پہاڑقیمتی پتھروں سے بھرے پڑے ہیں لیکن ہمارے نوجوان محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہیں ، ملک کے دیگر صوبوں ، شہروں میں ہر قوم کے وسائل پر ان کا حق ہے وہ وہاں کے مالک ہیں لیکن پشتون اپنے ہی وسائل سے محروم ہے ۔ ہمارے وسائل پر غیروں کا قبضہ ہے وہ یہاں آکر ارب پتی ، کھرب پتی بن گئے اور ہمارے نوجوانوں کو روزانہ کی بنیادپر اجرت پر رکھ کر ان سے مزدوری کی جارہی ہے۔ مقررین نے کہا کہ ہماری ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم نے کوشش کرنی ہوگی اور پشتونوں کو اپنے حقوق دلانے ہونگے میرا ایمان ہے کہ میں خون کے رشتے پر نہیں فکر کے رشتے پر یقین رکھتا ہوں ۔ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی اور انتخابی نشان ” درخت“ اس قوم کی نجات کا باعث بنے گی ۔ عوام پارٹی کے نامزد امیدواروں کو کامیاب کر کے انہیں اپنی نمائندگی کیلئے ملک کے ایوانوں میں بھیجیں یہی نمائندے آپ کو جوابدہ ہونگے کیونکہ پشتونخوامیپ ہی پشتونخوا وطن کے عوام کی جماعت ہے ۔ مقررین نے کہا کہ پشتونخوامیپ کے دور حکومت میں عوام کی فلاح وبہبود کے سکیمات اور اجتماعی ترقیاتی کاموں کا موازانہ ملک کے قیام سے لیکر اب تک کرسکتے ہیں

ہم نے عوام کی انفرادی ،یا کسی فرد کی خوشنودی کیلئے کام نہیں کیا بلکہ عوام کی مرضی ومنشاءپر ان کے مطالبات پر ان کی اجتماعی خدمت کو ترجیحی دی اور تعلیم ، صحت ، آبنوشی ، زراعت سمیت ہر شعبہ زندگی میں نمایاں خدمات سرانجام دیکر عوام کو امن فراہم کیا اور ساتھ ہی تمام مفلوج اداروں کو فعال بناکر انہیں عوام کی خدمت پر مامور بنایا ۔ لیکن بدقسمتی سے 2018کے انتخابات میں پارٹی کی کامیابی کو شکست میں تبدیل کرکے نمائندوں کو اسمبلی سے دوررکھا گیا اور اپنے من پسند افراد کو راتوں رات جماعت بناکر انہیں اقتدار حوالے کیا گیا جنہوں نے پانچ سال میں صرف اور صرف کرپشن وکمیشن کی اور اب انہی پیسوں کے ذریعے اپنے حلقوں میں عوام کے ضمیروں کو خریدنے کی ناکام کوشش کررہے ہیں ۔ لیکن غیور عوام انہیں ووٹ دینے کی بجائے پہلے ان کا احتساب کرینگے ۔ مقررین نے عوام سے اپیل کی کہ وہ 8فروری کوپارٹی کے انتخابی نشان ” درخت “ پر اپنا مہر ثبت کرے اور پارٹی کے نامزد امیدواروں کو کامیابی سے ہمکنار بنائیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.